Monday, 13 April 2015

جی ٹی روڈ سمیت گلیوں محلوں کی سٹریٹ لائٹس خراب ، چوری کی وارداتوں میں اضافہ

جہلم (سلام جہلم) جی ٹی روڈ سمیت گلیوں محلوں کی سٹریٹ لائٹس خراب ، چوری کی وارداتوں میں اضافہ ہو گیا۔ شہری ٹی ایم اے کی انتظامیہ کے خلاف سرا پا احتجاج ،ڈی سی او جہلم سے شہر اور جی ٹی روڈ پر نصب سٹریٹس لائٹس چالو کرنے کا مطالبہ ، تفصیلات کے مطابق نہ صرف جی ٹی روڈ پر نصب لائٹس کافی عرصہ سے خراب پڑی ہیں بلکہ شہر کے گلی محلوں میں سٹریٹ لائٹس کا نظام بھی انتہائی ناقص ہے میونسپل انتظامیہ اس گھمبیر مسئلہ کی طرف بالکل توجہ نہیں دے رہی جس کی وجہ سے راہگیروں اور ٹرانسپورٹروں ، سائیکل سواروں ، موٹر سائیکل سواروں ، کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ رات کے اندھیر میں پیدل چلنے والوں کوکچھ بھی دکھائی نہیں دیتا عشاءاور فجر کی نمازوں کی ادائیگی کے وقت بزرگ شہری مسجدوں میں جاتے وقت گلی محلوںمیں اندھیرا ہونے کی وجہ سے گلیوں میں موجود نالوں اور گڑھوں میں گرتے ہیں۔ علاوہ ازیں سٹریٹ لائٹس بند ہونے کے سبب چوری کی وارداتوں میں اضافے کا اندیشہ بھی پیدا ہو گیا ہے تھوڑی سی دلچسپی سے یہ نظام درست کیا جا سکتا ہے جو کہ تحصیل میونسپل ایڈمنسٹریشن کی انتظامیہ کی نااہلی کے باعث ممکن نہیں ہو پا رہا شہریوں نے ڈی سی او جہلم سے مطالبہ کیا ہے کہ اندرون شہر کے علاوہ جی ٹی روڈ پر نصب سٹریٹس لائٹس کو چالو کرنے کے احکامات جاری کئے جائیںاور میونسپل انتظامیہ کی توجہ اس طرف دلوائی جائے۔

سیکرٹری لیبر ڈیپارٹمنٹ حسن اقبال کا خصوصی دورہ، گھی خوردنی تیل کے نرخوں کے حوالے سے اہم اجلاس

جہلم (سلام جہلم) سیکرٹری لیبر آج جہلم کا دورہ کریں گے گھی خوردنی تیل کے نرخوں کے حوالے سے اہم اجلاس منعقد ہو گا۔ تفصیلات کے مطابق سیکرٹری لیبر ڈیپارٹمنٹ حسن اقبال آج جہلم کا خصوصی دورہ کریں گے اس موقع پر گھی خوردنی تیل کے نرخوں کے حوالے سے خصوصی اجلاس منعقد ہو گا۔ جسمیں حکومت پنجاب کیطرف سے شہریوں کوگھی و کوکنگ آئل کے نرخوں میں دئےے گئے ریلیف کے حوالے سے مقرر کردہ نرخوں کو یقینی بنانے اور عمل درآمد کرنے کے حوالے سے احکامات جاری کئے جائیں گے اور حکومتی نرخو ںکو مضافاتی علاقوں میں نافذ کرنے کے حوالے سے لائحہ عمل طے کیا جائےگا۔

پٹرول پمپو ں سے پٹرول غائب ، ذخیرہ اندوز متحرک

جہلم (سلام جہلم) جہلم شہر کے بیشتر پٹرول پمپو ں سے پٹرول غائب ، ذخیرہ اندوز متحرک پولیس پٹرول پمپوں کے علاوہ دیگر پمپ مالکان نے ڈپو سے پٹرول نہ ملنے کا بہانہ بنا کر پٹرول کی سپلائی بند کر دی ۔ شہری سارا دن زلیل وخوار ہوتے رہے، وفاقی حکومت سے فوری نوٹس لینے کا مطالبہ۔ تفصیلات کے مطابق ضلع جہلم کے درجنوں پٹرول پمپوں کے مالکان نے ڈپو سے سپلائی نہ ملنے کا عذر پیش کر کے گزشتہ روز علی الصبح سے ہی پٹرول کی فراہمی بند کر دی جسکی وجہ سے ذخیرہ اندوزوں اور غیر قانونی طور پر شہر اور گردونواح کے علاقوں میں قائم کی گئی پٹرول ایجنسیوں کے مالکان نے پٹرول پمپ مالکان کی ملی بھگت سے بھاری مقدار میں پٹرول ذخیرہ کر لیا جو اگلے آنے والے دنوںمیں شہریوں کو انتہائی مہنگے داموں فروخت کیا جائے گا۔جہلم شہر میں پولیس پٹرول پمپ ،پی ،ایس ،او شاندار چوک، پولیس پٹرول پمپ کا لٹکیس جادہ اور پولیس پٹرول پمپ ، پی، ایس ،او، دینہ پرگزشتہ روزبغیر کسی وقفے کے پورا دن پٹرول کی ترسیل جاری رہی اور شہریوںکو بغیر کسی مشکل کے ضرورت کے مطابق پٹرول فروخت کیا جاتا رہا پٹرول کی اچانک کمی کے حوالے سے درجنوںشہریوں نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ نا اہل حکمرانوںکی وجہ سے آئے روز بحران جنم لے رہے ہیں ۔ جہلم کے رہائشی محمد حفیظ نے کہا کہ موجودہ حکمران کے پاس مال بنانے والے وزیر ، مشیر، اور کارندے موجود ہیں جو سوچی سمجھی سازش کے تحت ایسے حالات پیدا کرتے ہیں جس سے ان کا مال پانی چلتا ہے ۔مجاہد آباد جہلم کے رہائشی طارق محمود نے کہا کہ پچھلے 5 سالہ دور میں عوام کی ہمدردی میں وزیر اعلیٰ پنجاب نے روٹی 2 روپے اور لوڈ شیڈنگ کے حوالے سے مینار پاکستان میں کیمپ قائم کر کے غریبوں کا ہمدرد ہونے کا جھوٹا دعویٰ کیا، وفاق میں میاں نوز شریف کی حکومت برسراقتدار آتے ہی وہ سب کچھ بھول گئے موجودہ دور میں جسطرح ملک بھر میں لاقانونیت نافذ ہے اس کی مثال ماضی میں نہیں ملتی ، پیرا غیب کے رہائشی محمد جواد ملک نے کہا کہ چند ماہ میں دوسری مرتبہ پٹرول بحران ،حکومت کی ناہلی کا منہ بولتا ثبوت ہے ۔عجیب وقت دیکھنے میں آیا ہے کہ پیسے پاس ہونے کے باوجود ضروریات زندگی کی چیزیں دستیاب نہیںجو چیزیںبازاروں میں فروخت کی جارہی ہیں حکومتی نرخوں سے کئی گنا اضافی رقم وصول کی جارہی ہے جبکہ معیار بھی تیسرے نمبر پر ہے موجودہ دور میں قبضہ مافیا ، چوروں ڈاکوں اور ملاوٹ مافیا کا راج ہے حکومت ڈنگ ٹپاﺅ پالیسی پر گامزن ہے شہریوں نے کہا کہ اگر حکومت موجودہ بحرانوں پر قابو نہ پاسکی تو حکومت کو کسی صورت چلنے نہیں دیا جائے گا، بلکہ حکومت کے خلاف جلسے جلوس نکالے جائیں گے اور حکمرانوں کو اقتدار چھوڑنے پر مجبور کر دیا جائےگا۔